Main Site aawsat.com/urdu

کردیوں کا تعاون کرنے میں روس امریکہ کے ساتھ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: منگل, 21 مارچ, 2017
0

کردیوں کا تعاون کرنے میں روس امریکہ کے ساتھ

11

شام کے مغربی شمال میں کردی اکثریت پر مشتمل عفرین نامی شہر کے عام منظر کو دیکھا جا سکتا ہے جیسا کہ دو سال قبل ظاہر ہوا ہے

بیروت: کارولین عاکوم

        روس نے بھی شام میں فوجی تعاون کے ارادہ سے کردیوں کا تعاون کرنا شروع کر دیا ہے جبکہ کرد عوام کی حفاظتی یونٹس کو یہ تعاون واشنگٹن کی قیادت میں بین الاقوامی معاہدہ سے حاصل ہوا ہے کیونکہ اس سے قبل اس حفاظتی یونٹس نے تنظیم داعش کے خلاف جنگ کرنے میں اپنی کارکردگی کا زبردست مظاہرہ کیا تھا اور عرب جماعتوں کے ساتھ مل کر شام کے شمال اور مشرقی شمال سے ان کو بھگانے میں کامیاب ہو گئے تھے۔

        حفاظتی یونٹس نے کل اس بات کا اعلان کیا ہے کہ اس نے روس کے ساتھ اپنی نوعیت کا پہلا معاہدہ کیا ہے جس کا مقصد شمالی شام میں اپنی فوجیوں کی تربیت مقصود ہے۔ اس نے اس بات کا بھی انکشاف کیا ہے کہ وہ سال رواں کے دوران سرحدوں پر اپنی فوج میں ایک لاکھ جنگجو کا اضافہ کرے گا۔ اسی طرح اس نے یہ بھی کہا ہے کہ روس شام کے مغربی شمال میں حفاظتی یونٹس کے ساتھ مل کر ایک فوجی اڈہ قائم کرنے جا رہا ہے اور قابل ذکر بات یہ ہے کہ یہ وہ علاقے ہیں جہاں حفاظتی یونٹس کا غلبہ ہے لیکن روس نے اس بات کی تردید یہ اشارہ کرتے ہوے کیا ہے کہ اب شام میں فوجی اڈے قائم کرنے کا کوئی لائحۂ عمل نہیں ہے۔

منگل 22 جمادی الثانی 1438 ہجری – 21 مارچ 2017ء شمارہ نمبر {13993}

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>