Main Site aawsat.com/urdu

ہادی: سعودی کی طرف سے یمن کو 10 ارب ڈالر کی امداد حاصل - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعرات, 23 فروری, 2017
0

ہادی: سعودی کی طرف سے یمن کو 10 ارب ڈالر کی امداد حاصل

2

تصویر میں9 فروری کو مخا میں جنرل احمد سیف یافعی کو یمن کی فوج کے ساتھ دیکھا جا سکتا ہے

جدة: سعيد الابيض

        کل یمن کے صدر عبد ربہ منصور ہادی نے اس بات کا اعلان کیا ہے کہ سعودی عرب نے 10 ارب ڈالر کی رقم سے یمن کی مدد کی ہے۔ انہوں نے اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا ہے کہ اس غیر معمولی رقم کے ذریعہ آزاد علاقوں میں تعمیراتی کام انجام دئے جائیں گے اور دو ارب ڈالر ملک کی کرنسی یعنی یمنی ریال کی حفاظت کے لئے مرکزی بینک میں رکھے جائیں گے۔

        صدر ہادی نے عدن میں ایک ایسے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے سعودی عرب کی مذکورہ امداد کی خبر دی ہے جس میں وزیر اعظم ڈاکٹر احمد عبید ابن دغر اور چند گورنر موجود تھے۔

        صدر ہادی نے اس اجلاس میں سب سے زیادہ اہم امور اورضروری ترجیحات کے سلسلہ میں توجہ دینے پر زور دیاہے جیسے کہ بجلی، پانی، صحت، تعلیم، راستے اور ٹیلی کام وغیرہ کے ادارے ہیں تاکہ شہریوں کو اس بات کا احساس ہو کہ ملک میں نقل وحرکت، علاقائی حکومت، استقرار واستحکام اور تعمیراتی کام کئے جا رہے ہیں۔

جمعرات 27 جمادی الاول 1438ہجری – 20 فروری 2017ء شمارہ نمبر {13964}

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>