Main Site aawsat.com/urdu

حلب کے انتقام میں ایک ترکی پولس کے ہاتھوں روس کے سفیر ہلاک - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 21 دسمبر, 2016
0

حلب کے انتقام میں ایک ترکی پولس کے ہاتھوں روس کے سفیر ہلاک

%d8%aa%d8%b1%da%a9%db%8c

انقرہ: سعید عبد الرزاق

       ایک ترکی پولس نے حلب کے انتقام میں جہادی زبان استعمال کرتے ہوئے روس کے سفیر کو اس وقت ہلاک کر دیا  جب وہ ترکی کی دار الحکومت میں ایک فنی سمپوزیم میں شریک ہونے کے لئے تشریف لائے تھے۔

       انقرہ شہر کے صدر ملیح گوشتشیک نے کہا کہ جس شخص نے کارلوف پر گولی چلائی ہے وہ پولس کا ایک فرد تھا۔ بنی شفق نامی ایک سرکاری میگزین نے بتایا کہ قاتل بلوا پولیس کا ایک رکن تھا ۔

       اسی کے ساتھ ساتھ انقرہ میں موجود "حرییٹ” نامی سرکاری میگزین کے نامہ نگار نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کو بتایا کہ کارلوف کے تقریر کرنے کے دوران پولس کے کپڑے میں ملبوس ایک شخص نے ہوائی فائرنگ کی پھر اس نے سفیر کو نشانہ بنایا  اور انہوں نے مزید کہا کہ وہ حلب اور انتقام کے متعلق کچھ کہ رہا تھا۔

        ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے پرزور انداز میں کہا کہ انہوں نے اپنے روسی ہم منصب بلادیمیر پوٹن کے ساتھ مل کر روسی سفیر کے قتل کی تحقیق کے لئے ایک مشترک کمیٹی تشکیل دینے کا اتفاق کیا ہے۔

       سرکاری "اناضول” نامی خبر رساں ایجنسی نے بتایا کہ پولس سے گولی چلانے والے سے متعلق سوال کئے جانے سے پر کوئی وضاحت نہیں ملی کیا وہ زندہ ہے یا اسے ہلاک کر دیا گیا۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>